Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

ایکسپو پاکستان میں بڑے پیمانے پر برآمدی و سرمایہ کاری معاہدوں کا امکان

صنعتی شعبوں کے ساتھ روزمرہ استعمال کی مصنوعات بھی توجہ کا مرکز۔ فوٹ: ایکسپریس

صنعتی شعبوں کے ساتھ روزمرہ استعمال کی مصنوعات بھی توجہ کا مرکز۔ فوٹ: ایکسپریس

کراچی: وزارت تجارت اور ٹریڈ ڈیولپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے تحت دسویں ایکسپو پاکستان نمائش کے نتیجے بڑے پیمانے پر برآمدی و سرمایہ کاری معاہدوں کا امکان ہے۔

ایکسپو پاکستان نمائش کے دوران ایکسپورٹ ڈیلز کھربوں روپے سے زائد رہنے کی توقع ہے جبکہ ابتدائی 3 روز میں اربوں روپے کے برآمدی معاہدے طے پا چکے ہیں جن میں صرف ٹاولز سیکٹر کے ساتھ 60 کروڑ روپے سے زائد کی ڈیلز ہوئی ہیں، 5 ارب روپے کی انویسٹمنٹ ڈیل بھی ہوئی ہے،نمائش اتوار کو ختم ہوگی۔

تیسرے دن کراچی ایکسپو سینٹر میں سیکورٹی سخت کیے جانے کے باوجود سب سے زیادہ گہماگہمی رہی اور پورا دن کراچی ایکسپوسینٹر کے باہر نمائش وزٹ کرنے والوں کی گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی رہیں، نمائش میں صنعتی شعبوں کے علاوہ روزمرہ استعمال کی مقامی و غیرملکی پروڈکٹس میں عوام بے پنا دلچسپی دیکھنے میں آئی اور ایکسپوسینٹر کے6 ہالوں میں پورا دن عوام کا رش دیکھنے میں آیا۔

نمائش میں اشیائے خوردونوش کے پاکستانی مینوفیکچررز کے پویلین میں غیرملکیوں کی زیادہ دلچسپی دیکھی گئی جنہوں نے پاکستانی سوئٹس نمکواور فروزن فوڈزکی کوالٹی کومدنظر رکھتے ہوئے متعدد پاکستانی کمپنیوں کے ساتھ کاروباری معاہدوں میں دلچسپی ظاہرکی۔

نمائش میں شریک یونائیٹڈ کنگ کے چیف ایگزیکٹوشیخ تحسین نے ’’ایکسپریس‘‘ کوبتایا کہ ان کی کمپنی پہلے ہی متحدہ عرب امارات برطانیہ ودیگر ممالک میں اپنی سوئٹس اور نمکوکی برآمدات کررہی ہے لیکن اس بار متعدد یورپین ممالک بشمول ساؤتھ افریقہ و دیگر افریقی ممالک نے پاکستانی نمکوکی درآمدات میں دلچسپی ظاہر کی ہے۔

فروزن فوڈ مینوفیکچرنگ کمپنی من وسلویٰ کے نمائندے محمدزبیر نے بتایا کہ وہ ایکسپو پاکستان کے توسط سے دنیا بھر میں پاکستانی پروسیسڈ فوڈز کی برآمدات کو فروغ دے کر پاکستانی ذائقے کو متعارف کرانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ناروے بیلجیم برطانیہ نیوزی لینڈ میں ان کی مصنوعات پہلے ہی برآمد کی جارہی ہیں تاہم نمائش کے دوران شمالی امریکا، یورپی وافریقی ممالک کے علاوہ انڈونیشیا اور ازبکستان جیسی غیرروایتی مارکیٹوں کے وفود نے ان کے اسٹال کا دورہ کرکے مختلف پاکستانی فروزن فوڈز کے ذائقے اور معیار کو چکھنے کے بعد برآمدی معاہدوں کا عندیہ دیا ہے۔

محمد زبیر نے بتایا کہ پاکستان سے تقریباً 4 ارب روپے مالیت کی فروزن فوڈز کی برآمدات ہوتی ہیں، اگر حکومت کی جانب سے اس شعبے کو بہترین کاروباری مواقع کے ساتھ ٹیکنالوجی اپ گریڈیشن اور لاجسٹک سہولتیں فراہم کی جائیں تو برآمدات کے اس حجم کودگنا کیا جا سکتا ہے کیونکہ دنیا بھر میں پاکستانی فروزن فوڈز کی ڈیمانڈ موجود ہے۔

 


News Source

ایکسپو پاکستان میں بڑے پیمانے پر برآمدی و سرمایہ کاری معاہدوں کا امکان

loading...

تبصرہ کریں