Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

جھل مگسی: خودکش حملے میں جاں بحق افراد کی تعداد 21 ہوگئی

بلوچستان کے ضلع جھل مگسی کی درگاہ فتح پور شریف میں خودکش حملے کے مزید 3 زخمی دم توڑ گئے جس کے بعد حملے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 21 ہوگئی۔

خودکش حملے کے دوسرے روز بھی جھل مگسی کی فضا سوگوار رہی۔

سانحہ کے 30 زخمی کوئٹہ، لاڑکانہ، جیکب آباد اور شہداد کوٹ کے ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں جن میں بچے بھی شامل ہیں، جبکہ جاں بحق ہونے والوں کی نماز جنازہ اور تدفین کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

فرض کی ادائیگی کے دوران جان قربان کرنے والے پولیس کانسٹیبل بہار خان کو آبائی علاقے پاچھ میں سرکاری اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کردیا گیا، اس موقع پر پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی پیش کی۔

کانسٹیبل کی نماز جنازہ میں پولیس حکام اور علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد شریک تھی۔

سیکیورٹی ایجنسیوں اور پولیس کے تفتیش کاروں نے دھماکے کی جگہ کا دورہ کیا اور خودکش حملے کی مکمل تفتیش کے لیے مزید شواہد اکٹھے کیے۔

پولیس افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ڈان کو بتایا کہ گنداوہ پولیس اسٹیشن میں ایس ایچ او کی مدعیت میں نامعلوم دہشت گردوں کے خلاف واقعے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے، جس میں دہشت گردی اور بارودی مواد کی دفعات ششامل کی گئی ہیں۔

وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے جھل مگسی دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے واقعے کی تحقیقاتی رپورٹ طلب کرلی۔

انہوں نے دہشت گردوں کو چن چن کر مارنے کے عزم کا اعادہ بھی کیا۔

دوسری جانب درگاہ فتح پور خودکش حملے کے خلاف پنجاب اسمبلی میں مذمتی قرارداد بھی منظور کی گئی۔


News Source

جھل مگسی: خودکش حملے میں جاں بحق افراد کی تعداد 21 ہوگئی

loading...

تبصرہ کریں