Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

مہمند ایجنسی میں کرفیو کا نفاذ



پاکستان کے قبائلی علاقے مہمند ایجنسی میں پولٹیکل انتظامیہ کے طرف سے کرفیو کے نفاذ کا اعلان کرتے ہوئے لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

کرفیو کے نفاذ کا اعلان جمعرات کو کیا گیا، اگرچہ باضابطہ طور پر تو اس کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی لیکن مقامی قبائلیوں کو کہنا ہے کہ مہمند ایجنسی میں مبینہ خودکش حملہ آوروں کی موجودگی کی اطلاعات کے بعد کرفیو نافذ کرنے کا اعلان کیا گیا۔

کرفیو کے نفاذ کے بعد جمعہ کو مہمند ایجنسی میں تمام کاروباری مراکز اور تعلیمی ادارے بند رہے۔

اسی قبائلی علاقے سے تعلق رکھنے والے اعجاز مہمند نے وائس آف امریکہ کو بتایا کہ اچانک کرفیو کے نفاذ سے لوگ بہت پریشان ہیں اور اُنھیں انتظامیہ کی طرف سے اس اقدام کی کوئی وجہ بھی نہیں بتائی گئی۔

’’لوگوں کو بہت تکلیف ہے، وہ گھروں سے نہیں نکل سکتے۔ طالب علم اور مریض جو ہیں اُنھیں مشکلات کا سامنا ہے۔۔۔۔ یہ جو اچانک کرفیو نافذ کیا گیا لوگوں نہیں معلوم کہ اس وجہ کیا ہے۔‘‘

اس سے قبل اپریل کے مہینے میں مہمند ایجنسی میں پولٹیکل انتظامیہ کی طرف سے موبائل فون کی سہولت بند کر دی گئی تھی۔

مہمند ایجنسی افغان سرحد کے قریب واقعہ ہے۔

رواں سال اپریل میں قبائلی علاقوں کے دورے کے موقع پر پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا تھا کہ پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کا کام ترجیحی بنیاد پر باجوڑ اور مہمند ایجنسی میں شروع کیا گیا ہے، جہاں فوج کے مطابق سلامتی کے زیادہ خدشات ہیں۔

تبصرہ کریں