Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان چوتھا ون ڈے آج کھیلا جائے گا


پاکستانی وقت کے مطابق میچ صبح 8 بجکر 20 منٹ پر شروع ہوگا۔ فوٹو:فائل

پاکستانی وقت کے مطابق میچ صبح 8 بجکر 20 منٹ پر شروع ہوگا۔ فوٹو:فائل

سڈنی: 

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پانچ ایک روزہ میچز کی سیریز پر مشتمل سیریز کا چوتھا میچ آج کھیلا جائے گا جب کہ سڈنی میں کھیلا جانے والا میچ گرین شرٹس کے لئے فائنل کی حیثیت اختیار کرچکا ہے۔

برسبین اور پرتھ میں شکست اور میلبرن میں جیت کے بعد گرین شرٹس کا کینگروز کے درمیان ایک مرتبہ پھرآمنا سامنا ہوگا اور پاکستانی وقت کے مطابق 8 بجکر 20 منٹ پر دونوں ٹیمیں سڈنی کرکٹ گراؤنڈ میں مدمقابل ہوں گی، سیریز بچانے کے لئے قومی ٹیم کو لازماً میچ جیتنا ہوگا۔ فٹنس بحال ہونے کے بعد قومی ٹیم کے کپتان اظہرعلی قیادت سنبھالنے کے لئے تیار ہیں، اسد شفیق کو ان کے لئے جگہ خالی کرنا پڑے گی، ٹیم کو خسارے سے نکلنے کے لئے غیر مستقل مزاج بیٹنگ اور ناقص فیلڈنگ کے مسائل پر قابو پانا ہوگا۔

روایتی طور پر اسپن کے لیے سازگار پچ پر سلوبولرز کی کارکردگی بھی اہم ہوگی، شرجیل خان اور بابراعظم امیدوں کا مرکز ہیں، مچل اسٹارک کی واپسی کینگروز پیس بیٹری کی طاقت میں اضافہ کرے گی، کنڈیشنز کو دیکھتے ہوئے لیگ اسپنر ایڈم زامپا کا نام بھی زیرغور آنے کا امکان ہے۔ میزبان ٹاپ آرڈر جارح مزاج گلین میکسویل اور جیمز فالکنر کو اچھا پلیٹ فارم فراہم کرنے کیلیے کوشاں ہوگی، موسم بہتر اورگرم رہنے کی پیشگوئی ہوئی ہے۔

قومی ٹیم کے قائم مقام کپتان محمد حفیظ کی میلبورن میں کارکردگی اچھی تھی لیکن پرتھ میں کریز پر قیام مختصر رہا، ان فارم بابراعظم سنگلز ڈبلز بنانے میں بھی مہارت رکھتے ہیں، نوجوان بیٹسمین سے بڑی توقعات وابستہ ہوں گی، مڈل آرڈر میں شعیب ملک اور عمراکمل کی بہتر کارکردگی بڑے ٹوٹل کی راہ ہموار کرسکتی ہے، دونوں اچھی فارم میں نظر آنے کے باوجود اننگز کے آخر تک بیٹنگ میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں، ذمہ دارانہ کھیل بعد میں آنے والے بیٹسمینوں محمد رضوان اور عماد وسیم کا کھویا ہوا اعتماد بھی واپس لاسکتا ہے، سڈنی کی پچ روایتی طور پر اسپنرز کے لئے سازگار ہوتی ہے، محمد عامر اور جیند خان کینگرو ٹاپ آرڈر کی جارحیت کو لگام دیں تو محمد حفیظ، عماد وسیم اور شعیب ملک میلبورن میچ کی کارکردگی دہراتے ہوئے رنز کا حصول دشوار بنا سکتے ہیں۔

دوسری جانب آسٹریلوی ٹیم سیریز میں فیصلہ کن برتری حاصل کرتے ہوئے آخری میچ کو بے معنی بنانے کیلیے پُرعزم ہے، گزشتہ میچ میں آرام کرنے والے پیسر اسٹارک کی واپسی ہو رہی ہے جس کیلیے طویل قامت بلی اسٹین لیک کو جگہ خالی کرنا پڑیگی، پاکستان کیخلاف میچ میں لیگ اسپنر کو بھی موقع دینے کا فیصلہ کیا جا سکتا ہے، گرین شرٹس نے پہلے بیٹنگ کی تو تازہ پچ پر میزبان پیسرز بھی مشکلات پیدا کرسکتے ہیں، موسم بہتر اورگرم رہنے کی پیشگوئی ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کا سڈنی گراؤنڈ پر مجموعی ریکارڈ زیادہ بہتر نہیں اور وہ تمام ٹیموں کیخلاف 20 میں سے صرف 6 ون ڈے ہی جیت سکی، آسٹریلیا سے 14 میچز میں صرف 4 فتوحات ہاتھ آئیں، گرین شرٹس یہاں گزشتہ پانچوں میچز ہارچکے ہیں۔

تبصرہ کریں