Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

روسی یونیورسٹی اور ضیاء الدین میڈیکل یونیورسٹی میں معاہدہ

ایوانوف اولیگووچ اورڈاکٹر عاصم نے دستخط کیے،سعید غنی،ناہیدمیمن کا بھی تقریب سے خطاب۔ فوٹو: فائل

ایوانوف اولیگووچ اورڈاکٹر عاصم نے دستخط کیے،سعید غنی،ناہیدمیمن کا بھی تقریب سے خطاب۔ فوٹو: فائل

 کراچی: سندھ انویسٹمنٹ بورڈ کے زیر اہتمام ’’سندھ سینٹ پیٹرز برگ بزنس فورم 2018‘‘ میں پیڈیاٹرک میڈیکل یونیورسٹی آف سینٹ پیٹرز برگ اور سندھ کی ضیاء الدین میڈیکل یونیورسٹی کے مابین مفاہمت کی ایک یادداشت پر روسی یونیورسٹی کے ریکٹر ایوانوف دیمتری اولیگووچ اور ضیاء الدین یونیورسٹی کے چانسلر ڈاکٹر عاصم حسین نے دستخط کیے۔

وائس گورنر سینٹ پیٹرز برگ مووخن سرگئی نکولائی وچ نے کہا کہ روس پاکستان کے ساتھ تعلقات کو مستحکم کرنا چاہتا ہے اور اس مقصد کیلیے کاروباری،تجارتی اور دیگر تمام شعبوں میں تعاون بڑھانے کا خواہاں ھے۔انہوں نے کاروبار کے فروغ کے لیے بینکنگ چینل کے قیام کی ضرورت سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ ماسکو اور اسلام آباد کو اس مقصد کیلیے باہمی گفت و شنید کرنی چاہیے۔

ڈاکٹر عاصم حسین نے اپنے خطاب میں کہا کہ روسی سرزمین خوبصورت ثقافتوں اور تصورات و ایجادات کی سرزمین ہے۔دیگر شعبوں کے ساتھ ساتھ روسیوں نے میڈیکل ٹیکنالوجی میں بھی شاندار ترقی کی ہے۔حکومت روس کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون اور پائیدار تعلقات کی خواہاں ہے۔

صوبائی وزیر ترقیات و منصوبہ بندی سعید غنی نے کہا کہ روس خطے کی بہت تیزی سے ابھرتی ہوئی معیشت ہے،حکومت روس کے ساتھ تعلقات کو بہت اہمیت دیتی ہے اور سفارتی و دیگر شعبوں میں تعلقات کو فروغ دینے کیلیے تعاون بڑھانے کی خواہاں ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے بانی چیئرمین شہید ذوالفقار علی بھٹو نے روس کے ساتھ تعلقات کے ایک خوشگوار دورکا آغاز کیا جسے ان کے بعد ایک ڈکٹیٹر نے اقتدار پرناجائز قبضہ کیا تھا نے نقصان پہنچایا۔

چیئرمین سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ ناھید میمن نے کہا کہ حکومت روس کے ساتھ تعلقات ازسرنو بحالی چاھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ روس کے ساتھ ہمارے تعلقات کی ایک تاریخ ہے حکومت ان تعلقات میں مزید بہتری اور گرمجوشی لانے کیلیے کوشاں ہے۔ اس موقع پر مختلف روسی کمپنیوں کے عہدیداروں نے اپنی مصنوعات کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی جبکہ پاکستانی کاروباری انجمنوں کے عہدیداران نے روسی وفد سے سوالات کیے جن کے روسی وفد کے ارکان نے مفصل جوابات دیے۔

اس موقع پر کراچی میں روس کے قونصل جنرل H.E.Aleksandr Khozin اور روسی قونصل خانے کے دیگر افسران جبکہ ایڈیشنل چیف سیکریٹری یونیورسٹیز اینڈ بورڈز سندھ محمد حسین سید، سندھ کے سیکریٹری داخلہ قاضی شاہد پرویز،سیکریٹری صنعت اعجاز احمد مہیسر،مختلف محکموں کے افسران اور پاکستانی تجارتی و کاروباری انجنوں کے عہدیداران کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔


News Source

روسی یونیورسٹی اور ضیاء الدین میڈیکل یونیورسٹی میں معاہدہ

تبصرہ کریں