Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

خواتین کے بارے میں نازیبا بیانات بھارتی کرکٹرز کو مہنگے پڑگئے

بھارتی ٹاک شو کافی ود کرن جب بھی اپنے نئے سیزن کے ساتھ سامنے آتا ہے، ہر بار کوئی نہ کوئی نیا تنازع کھڑا ہوجاتا ہے۔

ایسا ہی کچھ اس بار بھی ہوا جب کافی ود کرن سیزن 6 کی ایک قسط میں بھارتی کرکٹرز ہاردیک پانڈیا اور کے ایل راہول 6 جنوری 2019 کو سامنے آئی قسط میں ایک ساتھ جلوہ گر ہوئے۔

اس شو کے دوران بھارتی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر کھلاڑی ہاردیک پانڈیا نے خواتین سے متعلق کئی نامناسب جملے کہے، جس کے بعد انہیں سوشل میڈیا پر صارفین کی شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

جبکہ ابھرتے ہوئے کرکٹر کے ایل راہول بھی ان کے ایسے جملوں پر ان کا ساتھ دیتے اور ہنستے نظر آئے، جس کے بعد انہیں بھی تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

اس پورے شو کے دوران ہاردیک پانڈیا خود کو ایسے پیش کرتے رہے جیسے خواتین ان پر فدا ہیں، جبکہ کرن جوہر بھی اپنے شو کی ریٹنگز بڑھانے کی خاطر دونوں کھلاڑیوں کو ایسی باتیں کرنے پر اکساتے رہے۔

سوشل میڈیا پر شدید تنقید کے بعد ہاردیک پانڈیا نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک بیان جاری کیا، جس کے ذریعے انہوں نے اپنے جملوں سے ناظرین کا دل دکھانے پر معافی مانگی۔

ہاردیک پاندیا کا کہنا تھا کہ ’میں ہر اس شخص سے معافی مانگتا ہوں، جسے میرے کافی ود کرن میں کہے جملوں سے تکلیف پہنچی، حقیقت یہ ہے کہ جیسا شو کافی ود کرن ہے میں اس حساب سے بات کرتا رہا، میرا ارادہ کسی کو تکلیف پہنچانے کا نہیں تھا‘۔

جبکہ کے ایل راہول نے تاحال کوئی بیان جاری نہیں کیا۔

ہاردیک پانڈیا کی معذرت کے باوجود بورڈ آف کنڑول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) نے ہاردیک پانڈیا اور کے ایل راہول کو شوکاس نوٹس بھیج دیے۔

جبکہ ایسے طلاعات ہیں کہ ان دونوں کھلاڑیوں پر دو میچز کی پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا جارہا ہے۔

بی سی سی آئی کے اعلیٰ عہدیدار نے ہندوستان ٹائمز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’ہاردیک پانڈیا کی جانب سے مانگی جانے والی معافی اس معاملے کو دبا نہیں سکتی، اس سے ہی اندازہ ہوتا ہے کہ وہ خواتین کو عزت دینے جیسے بڑے معاملے کو کتنا ہلکا لے رہے ہیں، اس رویے کو قبول نہیں کیا جاسکتا، انہیں سمجھنا ہوگا کہ اس ملک میں ایک کرکٹر پر کتنی ذمہ داری ہے، بلکہ سب سے پہلے تو انہیں یہ سمجھنا ہوگا کہ کیا صحیح ہے اور کیا غلط‘۔

دوسری جانب بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے بھی دونوں کھلاڑیوں کے کافی ود کرن شو میں شرکت اور بیانات پر تنقید کی۔

ویرات کوہلی کا میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ’بھارتی کرکٹ ٹیم کے لیے خواتین سے متعلق ایسے نامناسب بیانات ناقابل قبول ہیں، ہم انہیں سپورٹ نہیں کرتے، یہ دونوں کھلاڑی جانتے ہیں کہ اس کا کتنا نقصان ہوگا اور انہیں اندازہ ہوگا کہ کیا چیزیں غلط ہوئیں‘۔

اس معاملے کے بعد کافی ود کرن شو کی اس متنازع قسط کو بھی ہٹادیا گیا۔


News Source

خواتین کے بارے میں نازیبا بیانات بھارتی کرکٹرز کو مہنگے پڑگئے

شناختی عنوان:,