Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

ڈنمارک: ترک سفارتخانے پر پیٹرول بم کے الزام میں شامی باشندوں کو سزا

ڈنمارک کی ایک عدالت نے کوپن ہیگن میں قائم ترک سفارتخانے پر پیٹرول بم پھیکنے کے الزام میں شام سے تعلق رکھنے والے 4 شہریوں کو قید اور ملک بدر کرنے کا حکم دے دیا۔

خبررساں ادارے اےایف پی کے مطابق چاروں شامی باشندوں کی جانب سے منصوبے اور حملے کا مقصد ’بھاری‘ نقصان پہنچانا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: شام میں کرد جنگجووں کے خلاف نیا آپریشن ہوگا، اردوان

اس حوالے سے بتایا گیا کہ چاروں مجرموں نے اپنے خلاف فیصلے پر نظر ثانی کی اپیلیں درائر کی ہیں۔

عالمی میڈیا کے مطابق چار میں تین شامی باشندوں کو ایک سال 9 ماہ قید جبکہ تفتیش کاروں سے تعاون پر ایک باشندے کو 18 ماہ قید کی سزا ہوئی۔

یاد رہے کہ ترک فوج نے 2016 اور رواں سال کے اوائل میں بھی شام میں کردوں کے خلاف کارروائیاں کی تھیں اور انہیں فرات کے مغربی علاقے میں پیچھے دھکیل دیا تھا۔

ترک فوج کا کہنا تھا کہ وائی پی جی کی جانب سے عفرین میں مہاجرین کے کیمپ کو نشانہ بنایا گیا جس کو ترکی پہلے ہی دہشت گرد تنظیم گردانتا رہا ہے جبکہ اسی طرح کے حملے ایک روز قبل بھی کیے گئے تھے۔

مزید پڑھیں: کرد باغیوں سے روابط پر ترکی کی امریکا پر تنقید

ترکی کی جانب سے وائی پی جی کو شام کی کردستان ورکرز پارٹی کی ذیلی تنظیم ہونے کا الزام عائد کیا جاتا رہا ہے جو ترکی کے جنوبی علاقوں میں دہائیوں سے بغاوت کی تحریک میں شامل ہے جبکہ اس کو ترکی کے علاوہ مغربی طاقتیں بھی دہشت گرد
گروپ تسلیم کرچکے ہیں۔

وائی پی جی شام میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ (داعش) کے خلاف جنگ میں نیٹو کے رکن امریکا کی اتحادی رہی ہے اور شام میں ان کے مضبوط گڑھ کو ختم کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔


News Source

ڈنمارک: ترک سفارتخانے پر پیٹرول بم کے الزام میں شامی باشندوں کو سزا