Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

تجاوزات کیخلاف آپریشن، ملبہ اٹھانے کا کام نیا مسئلہ بن گیا

اکثر مقامات پرپڑے ملبے سے سڑکیں تنگ ہوگئیں،راہگیروں کوچلنے میں پریشانی کا سامنا فوٹوفائل

اکثر مقامات پرپڑے ملبے سے سڑکیں تنگ ہوگئیں،راہگیروں کوچلنے میں پریشانی کا سامنا فوٹوفائل

 کراچی:  شہرمیں تجاوزات اور غیرقانونی تعمیرات کے خلاف کارروائی  تیزہوگئی ہے لیکن ملبہ اٹھانے کا کام سست روی کا شکار ہے۔

سڑکوں پر پڑے ملبے کے پہاڑ حادثات کا سبب بن رہے ہیں، اورنگی میں مسمارکی گئی دکان کی چھت سے سریا نکالتے ہوئے ملبہ گرنے سے نوعمرلڑکا ہلاک ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق شہر میں کئی ماہ سے بلدیہ عظمیٰ کے محکمہ انسداد تجاوزات اور ادارہ ترقیات کے محکمہ لینڈ کی جانب سے تجاوزات کے خلاف کارروائی جاری ہے تاہم مسمار کی گئی تجاوزات اور تعمیرات کا ملبہ اٹھانے کا کام انتہائی سست روی سے دوچار ہے۔

ملبہ نہ اٹھائے جانے سے شہرکھنڈرات کا منظر پیش کررہا ہے سڑکوں پر پھیلا ملبہ حادثات کا سبب بن رہا ہے جمعرات کوزمان ٹاؤن تھانے کی حدود کورنگی نمبر6 منا بھائی گجیا والے کے قریب کے ڈی اے کی جانب سے مسمارکی گئی دکان کی چھت سے سریا نکالتے ہوئے ملبہ گرنے سے نوعمر لڑکا جاں بحق ہو گیا جس کی لاش ضابطے کی کارروائی کیلیے کورنگی سندھ گورنمنٹ اسپتال منتقل کی گئی، جہاں متوفی کی شناخت 14 سالہ حسام الدین ولد عبداللہ کے نام سے کرلی گئی متوفی لڑکا الیاس گوٹھ کارہائشی اور اس کا آبائی تعلق افغانستان سے تھا۔

متوفی لڑکے کے اہل خانہ بغیرکسی کارروائی کے لاش اپنے ہمراہ لے گئے، لڑکے کی ہلاکت پر بڑی تعداد میں علاقہ مکین جمع ہوگئے علاقہ مکینوں نے تجاوزات کے خلاف کارروائی کو تنقیدکا نشانہ بنایا، مکینوں نے بتایا کہ صبح 3 افغانی بچے مسمار دکان کی چھت سے سریا نکال رہے تھے کہ اچانک دکان کی چھت کا ملبہ ایک بچے پرگرگیا جس سے وہ شدید زخمی ہوگیا جسے اسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ وہ راستے میں دم توڑ گیا جبکہ2 بچے محفوظ رہے۔

علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ چند روز قبل کے ڈی اے کے عملے کی جانب سے کورنگی نمبر 6 میں درجنوں دکانیں مسمارکردی گئی تھیں، کے ڈی اے کے محکمہ لینڈ نے مسمار دکانوں کا ملبہ ہٹانے کی زحمت تک نہ کی دکانوں کا ملبہ وہیں پڑا ہے ملبہ پھیل کر مرکزی سڑک تک آگیا ہے جو کسی بڑے حادثے کا سبب بن سکتا ہے، بچے کے اہل خانہ نے بتایا کہ حسام الدین صبح محلے کے بچوں کے ساتھ مدرسے گیا تھا اورمدرسے سے ہی وہ دیگر بچوں کے ہمراہ کچرے سے کارآمد اشیا چننے چلا گیا جہاں یہ حادثہ ہو گیا، متوفی لڑکے کے والد کا انتقال ہو چکا ہے۔


News Source

تجاوزات کیخلاف آپریشن، ملبہ اٹھانے کا کام نیا مسئلہ بن گیا

تبصرہ کریں