Pakistan  |  International  |  Business  |  Sports  |  Showbiz  |  Technology  |  Health  |  Wonder  |  Weather  |  Columns

پی پی کی پی ٹی آئی کو کھلی دھمکی ، بڑا کھڑاک ، کھلاڑیوں میں کھلبلی

کراچی (صباح نیوز ‘اے این این) وزیر بلدیات سندھ اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے کہا ہے وفاقی وزرا ءکے بیانات پر سندھ کے عوام میں انتشار پیدا ہو رہا ہے، جیسے ای سی ایل میں نام ڈالے ہم بھی وزرا کا سندھ میں داخلہ بند کرسکتے ہیں، قانون ہمیں ایسے وزرا ءکے سندھ داخلے پر پابندی کی اجازت دیتا ہے۔پیپلزپارٹی رہنما سعید غنی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا جے آئی ٹی نے اپنے اختیارات سے تجاوز کیا، انکا مقصد ایک صوبائی حکومت کو گرانا تھا۔ انہوں نے کہا علیمہ خان کے پاس کس ذرائع آمدن سے یہ جائیدادیں آئیں، دعوی کرتا ہوں کہ عمران خان صاحب کا گھر رقبے میں سب سے بڑا ہے، مطالبہ کرتا ہوں شوکت خانم میموریل کیلئے جو چندہ اکٹھا کیا جاتا ہے اسکا فرانزک آڈٹ ہونا چاہیے۔سعید غنی کا کہنا تھا اسٹینڈنگ کمیٹی جلد بن جائیں گی اس میں کوئی ایشو نہیں ہے، سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود کابینہ نے ای سی ایل سے نام نہیں نکالے، جے آئی ٹی رپورٹ آتے ہی حکومتی وز ر اءنے گورنر راج کی باتیں کیں، کہا گیا ہم وزیراعلی ہٹائیں گے۔ انہوں نے کہا مطالبہ کرتا ہوں جتنی تیزی سے پیپلزپارٹی قیادت کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا اسی طرح علیمہ خان کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے،اس معاملے پر بھی ایسی ہی جے آئی ٹی بنائی جائے جو پیپلزپارٹی کے خلاف بنائی گئی۔ پیپلزپارٹی نے مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اپنی بہن علیمہ خان کا نام بھی ای سی ایل میں ڈالیں ، نہ کاروبار نہ محنت مزدوری آخر ماجرا کیا ہے؟ اتنی جائیدادیں کہاں سے آئیں؟ اتنی ساری جائیدادیں کیسے بنائیں اور کہاں سے آئیں؟آصف زرداری پر الزام تراشی کرنے والوں کا مقدر شرمندگی ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے وزیر اعظم عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خانم کی بیرون ملک جائیداد کے انکشاف پر ان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری پر الزام تراشی کرنے والوں کا مقدر شرمندگی ہے ان کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی نے اپنے مینڈیٹ سے تجاوز کیا اور حکومت کو براہ راست نام بھیجے تھے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کا اصل مقصد صوبے سندھ کی حکومت ختم کرنا تھا اور پی ٹی آئی کے وزرا کے سندھ حکومت کے خلاف بیانات آرہے ہیں، وفاقی وزرا کے بیانات پر سندھ کے عوام میں انتشار پیدا ہو رہا ہے، جیسے ای سی ایل میں نام ڈالے ہم بھی وزرا کا سندھ میں داخلہ بند کرسکتے ہیں، قانون ہمیں ایسے وزرا کے سندھ داخلے پر پابندی کی اجازت دیتا ہے۔انہوں نے دعوی کیا کہ صوبہ سندھ کی حکومت کارکردگی میں سب سے آگے ہے۔پی پی پی رہنما نے وزیر اعظم عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ نہ کاروبار نہ محنت مزدوری آخر ماجرا کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے قوم کے اعتماد کو ٹھیس پہنچائی، لوگ غریبوں کے علاج کے لئے پیسے دیتے تھے، صدقہ اور خیرات کی رقم غریبوں کی امانت تھی۔انہوں نے کہا کہ انصاف کا تقاضا ہے کہ بیرون ملک جائیداد کے انکشاف پر علیمہ خان کے خلاف جے آئی ٹی بنائی جائے جو عمران خان اور علیمہ خان کے خلاف تحقیقات کرے۔انہوں نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب کی تقرری پر سوال کرتے ہوئے بتایا کہ شہزاد اکبر عمران خان کے ذاتی ملازم ہیں اور ان کی تقرری پر نیب کو بھی عدم اعتماد ہے۔ان کا کہنا تھا کہ شہزاد اکبر دوسرے سیف الرحمان بننے کی کوشش کر رہے ہیں۔صوبائی وزیر بلدیات نے کہا کہ انصاف کا تقاضا ہے کہ بیرون ملک جائیداد کے انکشاف پر علیمہ خانم کے خلاف جے آئی ٹی بنائی جائے جو عمران خان اور ان کی ہمشیرہ کے خلاف تحقیقات کرے۔انہوں نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب کی تقرری پر سوال کرتے ہوئے بتایا کہ شہزاد اکبر عمران خان کے ذاتی ملازم ہیں اور ان کی تقرری پر نیب کو بھی عدم اعتماد ہے جبکہ یہ دوسرے سیف الرحمن بننے کی کوشش کر رہے ہیں۔سندھ کے صوبائی وزیر ناصر شاہ نے کہا ہے کہ آصف زرداری کی بہن کے لئے الگ معیار ہے،وزیر اعظم کی بہن کے لئے الگ ہے۔وزیر جیل خانہ جات سندھ اور پیپلز پارٹی کے رہنما سید ناصر حسین شاہ تحریک انصاف پر پھٹ پڑے ،انہوں نے کہا کہ جعلی اکاونٹس کیس میں چیف جسٹس نے واضح احکام دیئے ہیں مگر توہین عدالت ہورہی ہے ،علیمہ خان کے 18 اکاونٹ کا بھی نوٹس لیا جائے۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی قیادت کے خلاف تیزی سے جے آئی ٹی بنائی گئی، علیمہ خان کے خلاف بھی فوری جے آئی ٹی بنائی جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ وزرا کے سندھ مخالف بیانات سے سندھ میں اشتعال پیدا ہورہا ہے،ایسا نہ ہوکہ پی ٹی آئی کے بدکلام وزرا کے سند ھ میں داخلے پرپابندی کی درخواست کی جائے۔کوئٹہ، اسلام آباد (این این آئی‘ اے این این) وفاقی وزیر برائے پٹرلیم ڈویژن غلام سرور خان نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) سے کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، نیب جسے بھی بلائے گا اسے وضاحت کے لئے جاناہوگا ، ملک میں بلاتفریق احتساب ہورہا ہے ،کابےنہ کو سپریم کورٹ کی جانب سے کسی کا بھی نام ای سی ایل سے نکالنے کا تحریری حکم نامہ نہیں ملا ، پاکستا ن کے کسی بھی حصے میںکوئی بھی کسی کا داخلہ بند نہیں کرسکتا، پٹرلیم ڈویژن کے ماتحت تمام کمپنیوں کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں صوبوں کو برابری کی بنیاد پر نمائندگی دی جائیگی ،آئندہ ماہ سعودی ولی عہد کا دورہ پاکستان متوقع ہے ،بلوچستان میں ایل پی جی گیس کے 26پلانٹ لگانے کے ٹےڈرز کر نے جارہے ہیں ، یہ بات انہوں نے جمعہ کو وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ میں وزیراعلیٰ بلوچستان میر جام کمال اور صوبائی وزراءو اراکین صوبائی اسمبلی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی ،وفاقی وزیر غلام سرور خان نے کہا کہ لین دین جمہوریت کاحسن ہے لیکن ان دوجماعتوں جنہوں نے پاکستان کو نقصان پہنچایا ہے ان سے کسی بھی قسم کا لین دین نہیں ہوسکتا ،بلاول بھٹو زرداری سمیت کسی بھی شخص کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےلئے کابےنہ کو سپریم کورٹ کا تحریری حکم نامہ نہیں ملا ، سندھ کے وزیر کی جانب سے کچھ وزراءکے داخلے کو بند کرنے کی بات سیاسی بیان ہے پاکستان میں کوئی کسی کا داخلہ بند نہیں کرسکتا ،انہوں نے کہا کہ ہم نے خود کو احتساب کے لئے پیش کیا ہے نیب خود مختار ادارہ ہے سپریم کورٹ بھی اپنا کام کر رہی ہے جو کوئی بھی بدعنوانی کے زمرے میں آئیگا وہ بچ نہیں پائے گا الیمہ خان یا کوئی بھی ہو قانون کی گرفت ہر ایک پر ہوگی حکومت نیب سمیت کسی بھی احتساب کے ادارے میں مداخلت نہیں کریگی انہوں نے کہا کہ آج جو لوگ سیخ پا ہو رہے ہیں انکی یاددہانی کے لیے بتانا چاہتاہوں کہ انہی کی حکومت اور اس وقت کی اپوزیشن نے اتفاق رائے سے موجودہ چیئرمین نیب کو تعینات کیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے حکم پر تمام صوبوں کے دورے کر رہا ہوں اور جو بھی معاملات زیر التواءہیں انکی تفصیل حاصل کرکے ان معاملات کو حل کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے تحریک انصاف اور بلوچستان عوامی پارٹی صوبے اور مرکز میں اتحادی ہیں بلوچستان کے مسائل پر وزیر اعلی سے تفصیلی بات ہوئی ہے اور یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ مسائل کے حل کے لئے کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی اور آنے والے دنوں میں مثبت تبدیلی رونماءہوگی انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کی سالمیت اور خوشحالی و استحکام کے لیے اپوزیشن سمیت تمام جماعتوں کو ساتھ لیکر چلنا چاہتے ہیں پٹرولیم ڈویژن کے ماتحت تمام کمپنیوں کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں تمام صوبوں کو برابر نمائندگی دی جائیگی ایسا کرنے سے صوبوں میں روزگار کے مواقعے اور مسائل کا خاتمہ ممکن ہوگا انہوں نے مزید کہا کہ غریب طبقے کو فلیٹ ریٹ پر گیس فراہم کرنے کا سوچ رہے ہیں پانچ سالوں میں گیس کمپنوں کا خسارہ 154 ارب روپے تک بڑھ گیا اب بھی ہم گیس اور این ایل جی سستے نرخوں پر فراہم کر رہے ہیں انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب کے وزیر پٹرولیم آج گوادر کا دورہ کریں گے جبکہ سعودی ولی عہد کی آمد بھی آئندہ ماہ متوقع ہے جس میں اہم معاہدوں پر دستخط ہونگے ایک سوال کے جواب میں غلام سرور خان نے کہا کہ چین کو سعودی عرب کی سی پیک میں شمولیت پر کوئی تحفظات نہیں ہیں ہم نے بلوچستان حکومت کو بھی آن بورڈ لیا ہے انکے تمام خدشات بھی دور کئے جارہے ہیں انہوں نے کہابلوچستان کے سرد اضلاع میں 28 مکس ایل پی جی پلانٹ نصب کئے جارہے ہیں جن میں سے 26 پر ٹینڈر جلد ہو جائیں گے جبکہ صوبے کے کسی بھی علاقے میں گیس کا مسئلہ ہے تو انکے نمائندے ہمارے پاس آئیں انکے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے انہوں نے بتا یا کہ بلوچستان میں گیس کے ذخائر دریافت کرنے کے لیے بھی صوبائی حکومت کو اختیار دیا گیا ہے صوبے میں ایکسپلوریشن کے لیے تین بلاک دینے کی کوشش کریں گے۔ اس موقع پر صوبائی وزراءو مشیران میر ضیاءلانگو ، محمد خان لہڑی، میر سلیم کھوسہ، عمر جمالی، نصیب اللہ مری، ڈپٹی اسپیکر بلوچستان اسمبلی سردار بابر موسی خیل، اراکین اسمبلی عبدالرشید بلوچ، مبین خلجی و دیگر بھی موجود تھے۔ وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی سیاست اب جھوٹی کہانیاں گھڑنے تک ہے،علیمہ خان کبھی ملک کی وزیراعظم نہیں رہیں، تمام جائیدادیں انہوں نے خود ڈکلیئر کی ہیں۔وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے مریم اورنگزیب کے ٹویٹ پرردعمل میں کہا کہ اِن لوگوں نے زندگی میں خود کوئی ٹکے کی بھلائی کا کام نہیں کیا، اپنی مرحوم سیاست کو زندہ کرنے کیلئے شوکت خانم اور نمل کو متنازع نہ بنائیں، علیمہ خان کبھی ملک کی وزیراعظم نہیں رہیں، تمام جائیداد انہوں نے خود ڈیکلیئر کی ہیں جب کہ اپوزیشن کی سیاست اب جھوٹی کہانیاں گھڑنے تک ہے۔ وفاقی وزیر اطلاعات فوادچوہدری نے کہا ہے کہ ن لیگ کی سیاست جھوٹی کہانیاں گھڑنے تک ہے، اپنی مرحوم سیاست کونئی زندگی دینے کی کوشش میں شوکت خانم اور نمل جیسے اداروں کو متنازع نہ بنائیں۔ جمعہ کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ن لیگ کی رہنما مریم اورنگزیب کو جواب دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فوادچوہدری نے کہا زندگی میں خود ٹکے کی بھلائی کاکام نہیں کیاتو مرحوم سیاست کوزندہ کرنے کیلئے شوکت خانم اور نمل جیسے بھلائی کےاداروں کومتنازع نہ بنائیں۔فوادچوہدری کہا ہے کہ علیمہ خان ملک کی وزیر اعظم نہیں رہیں اور جائیداد ڈکلیئر کی ہیں، آپ کی سیاست اب جھوٹی کہانیاں گڑنے تک ہے۔



News Source

پی پی کی پی ٹی آئی کو کھلی دھمکی ، بڑا کھڑاک ، کھلاڑیوں میں کھلبلی